زکوٰۃ اور خیرات کا بیان

عمل زکوٰۃ جہاں تک ہو سکے ایسے لوگوں کو دی جائے جو مانگتے نہیں آبرو تھامے گھروں میں بیٹھے ہیں۔ عمل خیرات میں تھوڑی چیز دینے سے مت شرماؤ جو توفیق ہو دے دو۔ عملیوں نہ سمجھو کہ زکوٰۃ دے کر اور خیرات دینا کیا ضرور ہے۔ ضرورت کے موقعوں پر ہمت کے موافق خرل خیرات کرتی رہو۔ عمل اپنے رشتہ داروں کو دینے سے دہرا ثواب ہے۔ ایک خیرات کا دوسرے رشتہ دار سے احسان کرنے کا۔ عمل غریب پڑوسیوں کا خیال رکھا کرو۔ عمل شوہر کے مال سے اتنی خیرات مت کرو کہ اس کو ناگوار ہو۔


مولانا اشرف علی تھانوی
اپریل ۲۰۱۹
اسلامی عقائد اور عمل پر فقہ کی ایک جامع کتاب۔