دوسری فصل کنزالعمال کے ترغیبی مضمون میں

حدیث :ارشاد فرمایا حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے عورتوں سے کیا تم اس بات پر راضی نہیں یعنی راضی ہونا چاہیے کہ جب تم میں کوئی اپنے شوہر سے حاملہ ہوتی ہے اور وہ شوہر اس سے راضی ہو تو اس کو ایسا ثواب ملتا ہے کہ جیسا اللہ کی راہ میں روزہ رکھنے والے اور شب بیداری کرنے والے کو اور جب اس کو درد زہ ہوتا ہے تو آسمان اور زمین کے رہنے والوں کو اس کی آنکھوں کی ٹھنڈک یعنی راحت کا جو سامان مخفی رکھا گیا ہے اس کی خبر نہیں پھر جب وہ بچہ جنتی ہے تو اس کے دودھ کا ایک گھونٹ بھی نہیں نکلتا اور اس کی پستان سے ایک دفعہ بھی بچہ نہیں چوستا جس میں اس کو ہر گھونٹ اور ہر چوسنے پر ایک نیکی نہ ملتی ہو اور اگر بچہ کے سبب اس کو رات کو جاگنا پڑے اس کو راہ خدا میں ستر غلاموں کو آزاد کرنے کا اجر ملتا ہے اے سلامت یہ نام ہے حضرت ابراہیم صاحبزادہ حضور اقدس صلی اللہ علیہ وسلم کی کہلاتی کا وہی اس حدیث کے راوی ہیں آپ ان سے فرماتے ہیں کہ تم کو معلوم ہے کہ میری اس سے کون عورتیں مراد ہیں باوجودیکہ نیک ہیں ناز پروردہ ہیں مگر شوہروں کی اطاعت کرنے والی ہیں اپنے شوہروں کی ناقدری نہیں کرتیں۔ الحسن بن سفیان طس وابن عساکر بن سلامۃ حاضنۃ السید ابراہیم حدیث : فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے جب عورت اپنے شوہر کے گھر میں سے اللہ کی راہ میں خرچ کرے مگر گھر کو برباد نہ کرے یعنی قدر اجازت و مقدار مناسب سے زیادہ خرچ نہ کرے تو اس عورت کو بھی ثواب ملتا ہے بسبب اس کے خرچ کرنے کے اور اس کے شوہر کو بھی اس کا ثواب ملتا ہے بوجہ اس کے کمانے کے اور تحویلدار کو بھی اس کے برابر ملتا ہے کسی کے سبب کسی کا اجر گھٹتا نہیں۔ عن عائشہ فائدہ۔ پس عورت یہ نہ سمجھے کہ جب کمائی مرد کی ہے تو میں ثواب کی کیا مستحق ہوں گی۔ حدیث: فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اے عورتو تمہارا جہاد حج ہے عن عائشہ فائدہ۔

دیکھئے ان کی بڑی رعایت ہے کہ ان کو حج کرنے سے جس میں جہاد کی برابر دشواری بھی نہیں جہاد کا ثواب ملتا ہے جو کہ سب سے زیادہ مشکل عبادت ہے۔ حدیث: فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے عورتوں پر نہ جہاد ہے جب تک علی الکفایہ رہے اور نہ جمعہ اور نہ جنازہ کی ہمراہی (طعن عن ابی قتادہ) فائدہ پھر دیکھئے گھر بیٹھے ان کو کتنا ثواب مل جاتا ہے۔ حدیث: فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے جب بیبیوں کو ساتھ لے کر حج فرمایا تو ارشاد ہوا کہ بس یہ حج تو کر لیا پھر اس کے بعد بوریوں پر جمی بیٹھی رہنا (حم عن ابی ہریرۃ) فائدہ مطلب یہ کہ بلا ضرورت شدید سفر نہ کرنا۔ حدیث: فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اللہ تعالی پسند کرتا ہے اس عورت کو جو اپنے شوہر کے ساتھ تو محبت اور لاڈ کرے اور غیر مرد سے اپنی حفاظت کرے۔ (قرعن علی) فائدہ مطلب یہ ہے کہ شوہر سے محبت کرنے اور اس کی منت سماجت کرنے کو خلاف شان نہ سمجھے جیسی مغرور عورتیں ہوتیں ہیں۔ حدیث: فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے عورتیں بھی مردوں ہی کے اجزاء ہیں (حم عن عائشہ) فائدہ چنانچہ حضرت آدم علیہ السلام سے حضرت حوا علیہا السلام کا پیدا ہونا مشہور ہے۔ مطلب یہ کہ عورتوں کے احکام بھی مردوں ہی کی طرح ہیں باستثنائے احکام مخصوصہ پس اگر ان کے فضائل وغیرہ جدا بھی نہ ہوتے تب بھی کوئی دلگیری کی بات نہیں جب اعمال پر فضائل کا مردوں سے وعدہ ہے ان ہی اعمال پر ان سے ہے۔ حدیث: فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے تحقیق حق تعالی نے عورتوں کے حصہ میں رشک کا ثواب لکھا ہے اور مردوں پر جہاد لکھا ہے پس جو عورت ایمان اور طلب ثواب کی راہ سے رشک کی بات پر جیسے شوہر نے دوسرا نکاح کر لیا صبر کرے گی اس کو شہید کے برابر ثواب ملتا ہے (طب عن ابی مسعود) فائدہ دیکھئے ایک ذرا سے ضبط پر کتنا بڑا ثواب ملتا ہے جو مزدوروں کو کس دشواری سے ملتا ہے۔

حدیث: فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی بی بی کے کاروبار کرنے سے بھی تم کو صدقہ کا ثواب ملتا ہے۔ (فرعن ابن عمر) فائدہ دیکھئے عورتوں کو راحت پہنچانے کا کیسا سامان شریعت نے کیا ہے کہ اس میں ثواب کا وعدہ فرمایا جس کی طمع میں ہر مسلمان اپنی بی بی کو راحت پہنچائے گا۔ حدیث فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے سب عورتوں سے اچھی وہ عورت ہے کہ جب خاوند اس کی طرف نظر کرے تو وہ اس کو مسرور کر دے اور جب اس کو کوئی حکم دے تو وہ اس کی اطاعت کر دے اور اپنی جان اور مال میں اس کو ناخوش کر کے اس کی کوئی مخالفت نہ کرے حم ن ک عن ابی ہریرۃ حدیث فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اللہ رحمت فرمائے پائجامہ پہننے والی عورتوں پر قط فی الافردک فی تاریخہ ہب عن ابی ہریرۃ فائدہ دیکھئے حالانکہ پاجامہ اپنی مصلحت پردہ کے لیے مثل امر طبعی کے ہے پہنا مگر اس میں بھی پیغمبر صلی اللہ علیہ وسلم کی دعا لے لی یہ کتنی بڑی مہربانی ہے عورتوں کے حال پر۔ حدیث فرمایا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے بدکار عورت کی بدکاری ہزار بدکار مردوں کی برابر اور نیک کار عورت کی نیک کاری ستر اولیاء کی عبادت کے برابر ہے ابو الشیخ عن ابن عمر دیکھئے کتنے تھوڑے عمل پر کتنا بڑا ثواب ملا یہ رعایت نہیں عورتوں کی تو کیا ہے۔

مولانا اشرف علی تھانوی
اپریل ۲۰۱۹
اسلامی عقائد اور عمل پر فقہ کی ایک جامع کتاب۔